غذاؤں کی تاثیر

غذاؤں کی تاثیر
٭اچار گرم خشک مزاج رکھتا ہے۔
٭اخروٹ خشک مزاج رکھتا ہے
٭انجیر گرم تر مزاج رکھتا ہے۔
٭آلو سرد خشک مزاج رکھتا ہے۔
٭انگور گرم تر مزاج رکھتا ہے۔
٭املی سر مزاج رکھتی ہے۔
٭اسپغول سرد مزاج رکھتا ہے۔
٭امرود معتدل مزاج رکھتا ہے۔
٭آڑو سر مزاج رکھتا ہے۔
٭بینگن گرم مزاج رکھتا ہے۔
٭بادام گرم مزاج رکھتا ہے۔
٭کھٹا انار سرد مزاج رکھتا ہے۔
٭آلوچہ سرد مزاج رکھتا ہے۔
٭پان کی تاثیر گرم خشک ہے۔
٭آملہ کی تاثیر سرد خشک ہے۔
٭چونہ کی تاثیر گرم ہے۔
٭پستے کی تاثیر گرم ہے۔
٭برف کی تاثیر سرد خشک ہے۔
٭گاجر معتدل مزاج ہے۔
٭پودینہ کی تاثیر گرم خشک ہے۔
٭بھنگ سرد مزاج ہے۔
٭تل گرم مزاج ہے۔
٭تمباکو گرم مزاج ہے
٭چائے گرم مزاج ہے۔
٭چنا گرم مزاج ہے۔
٭خربوزہ گرم مزاج ہے۔
٭چقندر گرم مزاج ہے۔
٭بیر خشک مزاج ہے۔
٭جامن سرد مزاج ہے۔
٭جو اور پالک کی تاثیر سرد ہے۔
٭مونگ پھلی گرم مزاج کی ہے۔
بھنڈی توری
٭سرد مزاج اور خشک ہوتی ہے۔
٭پیشاب کی جلن کو دور کرتی ہے۔
٭کبھی کبھی قبض بھی کر دیتی ہے۔ دیر ہضم ہے۔
٭خشکی دور کرتی ہے۔
بینگن
٭خشک مزاج سبزی ہے۔
٭بواسیر کے مریضوں کے لئے لاجواب ہے۔
٭دل کو مضبوط کرتی ہے۔
٭ہاضمہ مضبوط کرتی ہے اور جگر کو اقت دیتی ہے۔
ککڑی
٭پکا کر کھائیں یا دونوں حالتوں میں کھائیں مفید ہے۔
٭نمک کے ساتھ کھائیں تو جلد ہضم ہوتی ہے۔
٭امراض قلب میں بہترین ہے۔
٭پیاس کی شدت کو دور کرتی ہے۔
پینٹھا
٭سرد تر اور نہایت طاقتور ہے۔
٭رسائن ہے۔ خون اور گوشت کو بڑھاتا ہے۔
٭اعصاب اور گرمی کے جملہ امراض کے لئے مفید ہے۔
٭ قبض کو دور کرتا ہے اور حاملہ عورتوں کے لئے بہت مفید ہے۔
حلوہ کدو
٭سرد تر مزاج رکھتا ہے اور جلد ہضم ہے۔
٭دل دماغ اور جگر کو طاقت دیتا ہے۔
٭پیشاب کی جلن کو دور کرتا ہے۔
٭گرمی کا بخار دور کرنے کے لئے کدو کا ٹکڑا پاؤں اور ہاتھوں پر ملیں۔
ٹنڈا ٭سرد تر مزاج رکھتا ہے ۔
٭دل دماغ اور جگر کو طاقت دیتا ہے۔
٭گوشت کے ساتھ پکائیں تو دیر سے ہضم ہوتاہے۔
٭نزلہ زکام اور بلغم میں نقصان دہ ہے۔
ٹماٹر
٭خون پیدا کرتا ہے اور قبض کشا ہے۔
٭گردوں کی تکلیف میں ٹماٹر سے پرہیز کریں۔
٭چھلکا ہضم نہیں ہوتا اس لئے چھلکا اتار کر ہی کھائیں۔
٭موٹاپے اور شوگر کے مرض میں مفید ہے۔
ساگ
٭چولائی کا ساگ زود ہضم اور دافع زہرہے۔
٭سازاک کی پیپ اسے کوٹ کر پلانے سے ختم ہو جاتی ہے۔
٭قبض کشا ہے اور معدے کو طاقت دیتا ہے۔
٭پتھری اور ریت خارج کرتا ہے۔
٭نکسیر نزلہ اور پتھری کا شافع علاج ہے۔
٭قلفہ کا ساگ درد گردہ کو ختم کرتا ہے۔
کریلا
٭ گرم اور خشک مزاج کی سبزی ہے۔
٭خون کی خرابی کو دور کر کے خون صاف کرتی ہے۔
٭تلی جگر اور بخار کے لئے بہت مفید ہے۔ اور شوگر کے مریضوں کے لئے بھی بہت اکسیر ہے۔
٭بھوک لگاتا ہے اور معدے کو طاقت دیتا ہے۔
گھیا توری
٭سرد مزاج کی حامل سبزی ہے۔
٭خون کی گرمی اور جوش کو کم کرتی ہے۔
٭توری کا سالن جریاں خون میں بہت فائدہ دیتا ہے۔
٭مرچ ڈال کا توری کا سالن کھانے سے بخار ختم ہو جاتا ہے۔
٭قبض کشا ہے بھوک لگا تا ہے گرمیوں میں جلن اور پیاس دور کرتا ہےکھانسی اور گرمی کو دور کرنے میں مفید ہے۔
گھیا کدو
٭ سر تر سبزی ہے۔ ٭ بد ہضمی بخار اور دیگر خون اور گرمی کی بیماریوں کو دور کرتی ہے۔
٭گھیا کاٹ کر پیروں کے تلؤں پر مالش کریں تو گرمی ختم ہو جاتی ہے۔
٭حافظہ تیز کرتی ہے اور معدے کی تیزابیت کو دور کرتی ہے۔
سوہانجنہ
٭ مزاج خشک ہے۔ پھلیاں اور پھول کڑوے ہوتے ہیں
٭بادی امراض اور بلغم کے لئے اکسیر ہے۔
٭فالج ، جوڑوں کے درد ریح کے امراض اور کمر کے لئے بے حد مفید ہے۔
٭گردہ مثانہ کی پتھریاور ریت ختم کرتا ہے۔ معدے کو صاف اور بھوک بڑھاتا ہے۔
آلو
٭ سرد خشک مزاج کی حامل ہے۔
٭ زیادہ استعمال سے اپھارا ہو جاتا ہے۔
٭چھلکے سمیت ابال کر چھلکا اتارا جائے اور کھایا جائے تو طاقت ور ہے۔
٭آلو تنور میں بھون کر نمک لگا کر کھانے سے گنٹھیا کا مرض ختم ہو جاتا ہے۔
مٹر
٭سرد خشک اور زود ہضم ہے۔
٭ حیاتین اور پروٹین سے بھرپور سبزی ہے۔
٭جسم کی معدنی طاقت کو پورا کرنے میں مدد دیتی ہے۔
٭دیر ہضم ہے اس لئے امراض شکم کے مریض اس سے پر ہیز کریں۔
اجوائن
٭گرم خشک مزاج کی حامل ہے۔
٭جراثیم کش ہے اور تشنج ختم کرتی ہے۔
٭کسی بھی مقام پر درد ہو اس کا تیل استعمال کرنے سے درد ختم ہو جاتا ہے۔
٭ اجوائن کو میٹھے تیل میں ڈال کر کان میں ڈالنے سے کان کا درد ٹھیک ہو جاتا ہے۔
٭ اعضاء کا درد ہچکی نفخ، شکم میں بے حد مفید ہے۔
٭ گندے زخموں اور ناک کے کیڑوں کو ختم کر دیتی ہے۔
پیاز
٭ پیشاب آور اور حیض آور ہے۔
٭پیاز کا اچار قے دست ہیضہ اور امراض معدہ کو دور کرتا ہے
٭ پیاز کی گانٹھ ہاتھ میں ہو تو لو نہیں لگتی
٭بچھو بھڑ کاٹ لے تو پیاز کا رس درد ختم کر دیتا ہے۔
٭پیاز کاٹ کر نمک لگا کر ہچکی کے مریض کو کھلائیں تو ہچکی بند ہو جائے گی۔
٭وبائی امراض سسے بچنا ہو تو پیاز کو جیب میں رکھیں ۔
لہسن
٭معدے کی رطوبت ختم کرتا ہے۔
٭بچھو یا سانپ کاٹ لیں تو لہسن کھانے سے درد ختم ہو جاتا ہے۔
٭روزانہ صبح لہسن کے ایک دو جوئے کھانے سے زکام نہیں ہوتا۔
کچنار
٭ بواسیر کا خاتمہ کرتی ہے۔
٭مسلسل استعمال سے کسھ مالا پھوڑے پھسیوں اور برص سے نجات مل جاتی ہے۔
٭سرد خشک تاثیر کی حامل ہے اور معدے کا طاقت دیتی ہے۔
چقندر
٭ گرم تر تاثیر کی حامل ہے۔ عورتوں کے دودھ میں اضافہ کرتی ہے۔
٭جوڑوں کے درد میں مفید ہے۔
٭جگر کو طاقت دیتی ہے۔
لسوڑا
٭ سرد تر خاصیت کا حامل ہے۔
٭پیشاب کی جلن اور پیشاب کا بار بار آنا ختم کرتا ہے۔
٭پیاس کی شدت اور گرمی کے بخار کو رفع کرتا ہے۔
٭قبض کشا ہے اور گلے اور سینے کا طراوت دیتا ہے۔
سردا
٭ سرد مزاج کا حامل ہے۔
٭کمزور مریضوں کے لئے پکا ہوا پھل مفید ہے کچا نقصان دہ ہے۔
٭خون کو صاف کرتا ہے اور صالھ خون بناتا ہے۔
٭قوت باہ پیدا کرتا ہے۔
انار
٭میٹھا انار سرد تر اور کھٹا انار سرد خشک تاثیر کا حامل ہے گرمی دور کرتا ہے۔
٭کمزوری معدہ جگر دست اور قے میں ے حد مفید ہے۔
٭پیشاب آور ہے اور بھوک

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *